بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


کوئی بھی جھوٹ پکڑنے کے 10 آسان طریقے

  جمعہ‬‮ 5 اپریل‬‮ 2019  |  14:09

کسی کا جھوٹ پکڑنا ہمیشہ سے ایک مشکل کام رہا ہے، خاص طور پر جب اس کے پاس آپ سے زیادہ دلیلیں موجود ہوں۔ تو آپ کو کیسے پتا چلے گا کہ سامنے والا شخص جھوٹ بول رہا ہے یا نہیں؟یہاں آپ کو جھوٹ کی پہچان کرنے کے دس آسان طریقے بتا رہے ہیں۔٭ جسمانی حرکاتجھوٹ بولنے والے انسان کی جسمانی حرکات

یکسر بدل جاتی ہیں۔ وہ اپنے ہاتھ چھپاتا ہے، جیبوں میں ہاتھ ڈال لیتا ہے، ہاتھوں کو کمر کے پیچھے باندھ لیتا ہے۔ یا پھر اپنے پاؤں کو ہلاتا ہے یا زمین پر بجاتا ہے۔

سوال پوچھے جانے پر ہونٹوں پر زبان پھیرتا ہے۔٭ سانسیںجھوٹ بولنے والے شخص کی سانسیں دل کی دھڑکن تیز ہونے اور خون کے بہاؤ میں تیزی آنے کے باعث تیز ہوجاتی ہیں۔٭ اکڑآپ نوٹ کریں گے کہ جھوٹے انسان کے جسم میں اکڑن محسوس ہوتی ہے۔

 کندھے اونچے ہوجاتے ہیں اور بازو اور ٹخنے مڑجاتے ہیں۔٭ پسینہسفید جھوٹ ہمیشہ پسینے میں شرابور کردیتا ہے۔ یعنی جھوٹ بولنے والے کو زیادہ پسینے آتے ہیں۔٭ نظر ملانااگر کوئی جھوٹ بول رہا ہے تو وہ نظر نہیں ملا پائے گا، لیکن اگر آپ اسے نظر ملانے کا کہیں گے تو وہ بنا پلک جھپے آپ کی آنکھوں میں مسلسل دیکھے گا یا پھر معمول سے زیادہ پلکوں کو جھپکے گا۔٭ مدعا بدلناجھوٹا انسان اگر باہر سے پرسکون بھی دکھا رہا ہو تو بھی وہ اندر سے تذبذب کا شکار رہتا ہے۔

 اس لئے وہ جلد سے جلد بات کو بدلنے کی کوشش کرتا ہے۔٭ چہرے کو چھونابار بار چہرے اور گردن کو چھونا، ناک کھجانا، بالوں میں ہاتھ پھیرنا اور بات کرتے ہوئے منہ پر پاتھ رکھنا جھوٹ کی نشانی ہے۔٭ دفاعی طرزجھوٹ بولنے والا زیادہ دفاعی انداز اختیار کرتا ہے۔ یعنی سوال کا جواب نہیں دیتا اور الٹا آپ پر الزام لگاتا ہے۔  اگر کوئی کہے کہ ‘تم کیوں جاننا چاہتے ہو؟’ یا ‘یہ اہم نہیں ہے’،

 تو وہ اپنی برداشت کی حد کو پہنچ گیا ہے اور دفاعی انداز اختیار کر رہا ہے۔٭ آواز اور رفتارجھوٹ بولتے وقت انسانی کی آواز کی نالی سخت ہوجاتی ہے جس کے باعث اس کی آواز تیز ہوجاتی ہے، ساتھ ہی جھوٹے شخص کی بولنے کی رفتار بھی معمول سے تیز ہوجاتی ہے۔

 وہ ہکلاتا ہے اور الفاظ کی غلطیاں بھی کرتا ہے۔٭ ٹیکنالوجی لیکن اگر کوئی شخص آپ کے سامنے نہ ہو یا میسیجز پر بات ہو رہی ہو تب کیسے پہچانیں گے؟ اگر وہ میسیجز پر جھوٹ بول رہا ہے تو اس کے لکھنے کا انداز بدل جائے گا، وہ جواب دینے میں دیر لگائے گا۔ ایسا شخص بات کو بدلنے کی کوشش کرےگا اور ‘سچ کہوں تو’ اور میرا یہ مطلب ہے کہ’ جیسے جملے استعمال کرےگا۔


loading...

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎