Android AppiOS App

بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


دانتوں میں ٹھنڈا، گرم

  منگل‬‮ 9 اپریل‬‮ 2019  |  13:42

اللہ تبارک تعالی نے ہر بالغ فرد کو دانتوںجیسی نعمت سے نوازا ہے۔ان کی تعداد32ہے،جو انتہائی متوازن طریقے سے دونوں جبڑوں کی ہڈی میں اِستادہ اور پیوست کیے گئے ہیں۔دانت شکل اور جسامت کے اعتبار سے ایک دوسرے سے یک سر مختلف ہوتے ہیں۔ہر دانت چار حصّوں پر مشتمل ہے۔پہلااینامل(Enamel)،ظاہری حصّہ

ہے، دوسرا ڈینٹائن(dentine)، تیسرا سیمینٹم (Cementum) اور چوتھا گودا (pulp)کہلاتاہے، جسے دانت کا مغز بھی کہا جاتا ہے۔ جس طرح دماغ پورے جسم کی حرکات و سکنات، احساسات اور خون کی گردش کنٹرول کرتا ہے، اسی طرح Pulp بھی دانت کی حسّاسیت، خون اور اعصاب کنٹرول

کرتا ہے۔بعض اوقات کسی فرد کو کچھ کھاتے پیتے ہوئے دانت میں ٹھنڈا یا گرم لگنے کا شدیداحساس ہوتا ہے،

 تو ایسی صورت میں سب سے پہلے متاثرہ دانت کا ایکسرے کیا جاتا ہے، تاکہ یہ معلوم کیا جاسکے کہ حسّاسیت کی نوعیت کس درجے پر ہے۔ بعض اوقات ایکسرے کے ذریعےدانت کے تاج یعنیApexمیں کوئی غبارہ نما جھلّی دِکھائی دیتی ہے، جسے طبّی اصطلاح میںPeriapical abscess یا عرفِ عام میں چھالا بن جانا کہا جاتا ہے۔بلاشبہ یہ بھی قدرت کی عظیم صناعی ہے کہ ہر دانت کی اندرونی ساخت قطعاً مختلف ہوتی ہے۔

 کسی دانت کی سنگل رُوٹ کینال ہے،توکوئی ڈبل رُوٹڈ(Double-Rooted)اور کوئی کثیر الکینال یعنیMultiple rooted ہوتا ہے۔اصل میں یہ علامت جبڑے کی ہڈی میں چُھپی ہوتی ہے،لہٰذااس کیفیت سے دوچار مریض کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ رُوٹ کینال تھراپی کروائے،تاکہ تکلیف سے نجات مل سکے۔آر سی ٹی کے لیے مریض کو پہلے لوکل اینستھیسیا دیا جاتا ہے اور پھر ایک آلے ہینڈ پیس میں پیوستDiamond Bier کی مدد سے دانت کی اوپری سطح میں،جوOcclusalکہلاتی ہے، سوراخ کرکے کھولا جاتا ہے۔اس کے بعد اسیٹن لیس اسٹیل کی مختلف شکل، سائز اور دندانے دار ساخت کی حامل سوئیوں کو متاثرہ دانت کی جڑمیں گھمایا جاتا ہے۔

بعض اوقات کچھ اور سوئیوںBarbed Broaches کا استعمال بھی کیا جاتا ہے،تاآنکہPulp تک رسائی نہ ہوجائے۔ بالآخر اس فاسد مواد کو باہر نکال لیا جاتا ہے، تاکہ متاثرہ دانت کی وہ نَرو سپلائی کاٹ دی جائے، جو اس حسّاسیت کا سبب بنتی ہے۔ یہ پورا عمل تقریباً 4سے5 دِنوں پر مشتمل ہوتا ہے اور ہر روز یہی عمل دہرایا جاتا ہے۔نیز، اس فاسد مواد کو ہائیڈروجن پر آکسائڈ میں بھگو کر یہ بھی معلوم کیا جاتا ہے کہ اس میں ابھی کس قدر انفیکشن موجود ہے۔ بعض اوقات اسے سونگھ کر بھی اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

 جب تک دندان ساز کو مکمل طور پریہ تسلی نہ ہوجائے کہ فاسد مواد میں کسی قسم کی بُو نہیںہے، تو وہ دانت کی جڑکو اچھی طرح سے جراثیم سے پاک کرتا ہےاوریہ ساری مشق ڈینٹیسٹری کی اصطلاح میں Pulpitis ،جب کہ مکمل علاج، رُوٹ کینال تھراپی کہلاتا ہے۔ اب مریض ہر قسم کی گرم اور ٹھنڈی شے باآسانی کھا سکتا ہے۔ بعد ازاں ،متاثرہ دانت کی مکمل فِلنگ کردی جاتی ہے، جسے Pulpectomyبھی کہتے ہیں۔ تاہم،جب دانت کے تاج سے فاسد مواد نکالا جارہا ہوتا ہے،تب بھی کبھی کبھارPulpotomy کی ضرورت پیش آسکتی ہے۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎