بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


قادیانی عاطف میاں نے عمران خان کی جانب سے ایڈوائزری کونسل سے نکالے جانے کے بعد اپنے آرٹیکل میں کیا لکھا ہے؟ معروف صحافی عارف نظامی تفصیلات سامنے لے آئے

  جمعہ‬‮ 12 اکتوبر‬‮ 2018  |  16:05

اسلام آباد نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی عارف نظامی کا کہنا تھا کہ حکومت نے آئی ایم ایف سے 8بلین ڈالر قرضے کی درخواست نہیں کی بلکہ یہ درخواست 12بلین ڈالر کی ہے جس میں متفرق اخراجات بھی شامل ہیں۔ عارف نظامی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے معاشی حالات برے نہیں بلکہ بہت برے ہیں۔ آمدن اور

اخراجات میں بہت زیادہ تفادت ہے جس کا ہمیں پتہ ہے مثلاََ پاکستان اسحاق ڈار اور اس سے قبل مگر خصوصی طور پر اسحاق ڈار کے دور میں امپورٹ پر انحصار کرنیوالا ملک بن

گیا۔ عارف نظامی نے کہا کہ ڈاکٹر عاطف میاں جن کو وزیراعظم نے اقتصادی ایڈوائزری کونسل میں شامل کرنے کے بعد فارغ کیا تھا انہوں نے پاکستان پر ایک آزاد پیپر لکھا ہے جس میں وہ لکھتا ہے کہ اگر کوئی ملک یہ سمجھتا ہے کہ وہ صرف قرضوں کی بنیاد پر ترقی کر سکتا ہے مگر ایسا نہیں ہوتا ۔ وہ ملک صرف اس صورت میں ترقی کر سکتا ہے جب اس کی اپنی پیداواری صلاحیت بڑھے اور وہ اس کو دنیا کو فروخت کر کے زرمبادلہ کما سکے۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎