بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


انہیں تم بھی جانتے ہو اور میں بھی

  جمعہ‬‮ 12 اکتوبر‬‮ 2018  |  17:31

صاحب کی اماں کو بیٹی کے گھر اتار کر اس نے سوچا۔ نئی پراڈو ہے اپلائیڈفار چلو کچھ ڈیش ڈرامہ کرتے ہیں۔ سو اسلام آباد کے روڈز پر گھومنے پھرنے لگا‘ایک ناکے پر پولیس نے روک لیا‘ہاں بھائی شہزادے کدھر؟جی ادھر ہی۔ کاغذات دکھا نا ذرا‘ابھی بنے ہی نہیں جی۔ لائسنس‘وہ گھر رہ گیا‘شناختی کارڈ‘وہ بھی گھر رہ گیا۔ چل پھر تو بھی

چل بڑے گھر تھانے۔ چل ٹرن مار۔ صاحب۔ معاف کر دیجیے۔کر دیں گئے۔ ذرا تھانے تو چل۔ صاحب‘مشکل سے نوکری لگی ہے کسی اچھی جگہ پر صاحب نے نکال دینا ہے۔(تب اسے یاد آیا

کہ اس کا صاحبتو خود سرکاری افسر ہے)میرے صاحب اٹھاریویں گریڈ کے افسر ہیں۔ میرے صاحب کا گریڈ اس سے بھی ذیادہ ہے وہ انیسویں گریڈ ہیں۔ نہیں نہیں۔آپ ہی مہربانی فرما دیں۔ میں بہت غریب بندہ ہوں۔ پولیس والا۔سوچتے۔ہوئے۔ اچھا یار۔ چل تو بندہ اچھا لگتا ہے ایسا کر کوئی ایسی ضمانت دے جسے میں بھی جانتا ہوں اور تم بھی میں چھوڑ دوں گا‘ جی صاحب آپ فقیر ہوٹل والے کو جانتے ہیں؟نہیں میں نہیں جانتا۔نور خان ڈینٹر کو؟

نہیں جانتا۔فرید ٹائر والے کو؟نہیں میں نہیں جانتا۔رفاقت درزی کو؟نہیں میں نہیں جانتا۔ کریم باربر کو؟نہیں میں نہیں جانتا۔صاحب۔ میں تو اس شہر میں انہی کو جانتا ہوں اور میں اس شہر میں ان کو نہیں جانتا۔ پھر صاحب۔؟پھر میں کچھ افراد کو جانتا ہوں اگر تم بھی ان کو جانتے ہو تو بات بن سکتی ہے‘جی جی۔ بلکل جی آپ نام بتائیں فرخ وکیل کو جانتے ہو۔؟نہیں جی میں نہیں جانتا۔ ڈاکٹر امداد کو جانتے ہو۔؟نہیں جی میں نہیں جانتا‘شیخ باسط کو جانتے ہو۔۔؟نہیں جی۔۔قدوس ڈیلر کو جانتے ہو۔؟نہیں جی میں نہیں جانتا۔ یار جنہیں تم جانتے ہو میں نہیں جانتا۔

 اور جنہیں میں جانتا ہوں تم نہیں جانتے۔ اور ہمیں چاہیے ایسی شخصیت جس ہم دونوں جانتے ہوں پھر صاحب۔پھر۔ کیا۔کوئی ضمانت۔۔یا پھر تھانہ۔ میں صاحب سے بات کر لوں؟کر لو۔۔موبائل نکالا۔ رابطہ ہوا۔ صاحب کو تمام کہانی بتائی صاحب نے کہا۔ پولیس والے سے میری بات کراؤ۔۔بات کرائی۔ وہ بات کرتا کچھ دور گیا۔پھر واپس آیا صاحب سے پھر اس کی بات کرائی۔ جی صاحب۔ اوئے۔ سو روپے ہیں تیرے پاس۔ جی ہے۔۔دے اس پلس والے کو اور جان چھڑا۔ جی سر۔سو روپے۔نکالا پولیس والے کو دیا۔ ساتھ گلہ بھی۔یہ حل تھا تو پہلے بتا دیتے‘میں تو تجھے بتا رہا ہوں کہ ایسی کوئی ضمانت جسے ہم دونوں جانتے ہوں تم ہی سمجھ نہیں رہے تھے۔ یہ دیکھ قائد اعظم کو انہیں میں بھی جانتا ہوں اور تم بھی۔ دن کی بہترین پوسٹ پڑھنے کیلئے لائف ٹپس فیس بک پیج پرمیسج بٹن پر کلک کریں

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎