Android AppiOS App

بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


جہالت کی انتہا پڑوسی ملک کاایک ایساگائوں جہاں عورتوں کومردوں کے سامنے چپل پہننے تک کی اجازت نہیں

  ہفتہ‬‮ 10 ‬‮نومبر‬‮ 2018  |  8:34

 دمکتے چمکتے بھارت کے ویسے تو دنیا بھر میں چرچے رہتے ہیں، اور خود ہندوستانی حکومت اپنی تعریفیں کرتے نہیں تھکتی، دنیا کی سب سے بڑی سیکولر جمہوریت کا دعویٰ کرنے والے بھارت میں جہاں ذات پات کے مسائل بڑا مسئلہ ہیں، وہیں خواتین کو تو انسان ہی نہیں سمجھا جاتا، ایک حالیہ رپورٹ کے سامنے آنے سے پتہ چلا

ہےکہ بھارت کے ایک گاؤں میں خواتین کو مردوں کے سامنے چپل پہننے کی اجازت تک نہیں، بھارت کی وسطی ریاست مدھیہ پردیش کے چمبل ڈویژن کے ایک گاؤں آمیٹھ میں خواتین مردوں کے سامنے چپل نہیں

پہن سکتیں۔انھیں مردوں کے سامنے آنے یا ان کے سامنے سے گزرنے کے لیے چپل اتار کر ننگے پاؤں چلنا پڑتا ہے۔تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے گاؤں آمیٹھ میں خواتین کو مردوں کے سامنے چپل پہننے تک کی اجازت نہیں،

بھارتی میڈیا کے مطابق مطابق تقریباً 1200 افراد پر مشتمل اس گاؤں میں خواتین کی آبادی تقریباً 500 ہے۔ صبح سویرے آمیٹھ کی خواتین پانی کے لیے تقریباً ڈیڑھ کلو میٹر کا سفر کرتی ہیں جہاں ایک چشمے سے پانی حاصل ہوتا ہے۔گھر کے لوگوں کے لیے پانی کا انتظام کرنے میں انھیں روزانہ 7،8 گھنٹے لگتے ہیں۔ ایک ایسی ہی خاتون ششی بائی کا کہنا تھا کہ انھیں گھر اور سماج میں وہ عزت نہیں ملتی جس کی وہ مستحق ہیں