بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ

ﺍﻋﺘﺮﺍﻑ ﮔﻨﺎﮦ

  پیر‬‮ 16 اپریل‬‮ 2018  |  1:35

ﺣﻀﺮﺕ ﻣﻮﺳﯽ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﺮﺗﺒﮧ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﺳﮯ ﭘﻮﭼﮭﺎ ﯾﺎ ﺍﻟﻠﮧ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺑﺪﺗﺮﯾﻦ ﺷﺨﺺ ﮐﻮﻥ ﺳﺎ ﮬﮯ ؟ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮐﻞ ﺻﺒﺢ ﺟﻮ ﺷﺨﺺ ﺗﻤﮭﯿﮟ ﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﻧﻈﺮ ﺁﺋﮯ ﻭﮦ ﺁﭖ ﮐﯽ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺑﺪ ﺗﺮﯾﻦ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮬﮯ ﺣﻀﺮﺕ ﻣﻮﺳﯽ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﺻﺒﺢ ﺟﯿﺴﮯ ﮨﯽ ﮔﮭﺮ ﺳﮯ ﺑﺎﮨﺮ ﺗﺸﺮﯾﻒ ﻻﺋﮯ ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺺ ﺍﭘﻨﮯ ﺑﯿﭩﮯ ﮐﻮ ﮐﻨﺪﮬﮯ ﭘﺮ ﺑﭩﮭﺎﺋﮯ ﮬﻮﺋﮯ ﮔﺰﺭﺍ ﺣﻀﺮﺕﻣﻮﺳﯽ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﻧﮯ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺳﻮﭼﺎ ﺍﭼﮭﺎ ﺗﻮ ﯾﮧ ﮬﮯ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺑﺮﺍ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﭘﮭﺮ ﺁﭖ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﺳﮯ ﻣﺨﺎﻃﺐ ﮬﻮﺋﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﮩﺎ ﯾﺎ ﺍﻟﻠﮧ ! ﻣﯿﺮﯼ

ﺍﻟﻠﮧ ! ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺍﭼﮭﺎ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﻮﻥ ﺳﺎ ﮬﮯﺍﺳﮯ ﺩﮐﮭﺎﺋﯿﮟ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺷﺎﻡ ﮐﻮ ﺟﻮ ﺷﺨﺺ ﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺁﭖ ﺳﮯ ﻣﻠﮯ ﻭﮦ ﺁﭘﮑﯽ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯﺑﮩﺘﺮﯾﻦ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮬﮯ ﺣﻀﺮﺕ ﻣﻮﺳﯽ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﺷﺎﻡ ﮐﻮ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﮐﺮﻧﮯ ﻟﮕﮯ ﮐﮧ ﺍﭼﺎﻧﮏ ﺍﻧﮑﯽ ﻧﻈﺮ ﺻﺒﺢ ﻭﺍﻟﮯ ﺑﺪ ﺗﺮﯾﻦ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﭘﺮ ﭘﮍﯼ ﯾﮧ ﻭﮨﯽ ﺷﺨﺺ ﺟﻮ ﺻﺒﺢ ﻣﻼ ﺗﮭﺎ ﺣﻀﺮﺕ ﻣﻮﺳﯽ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﻧﮯ ﺍﻟﻠﮧ ﺳﮯ ﮐﻼﻡ ﮐﯿﺎ ﯾﺎ ﺍﻟﻠﮧ ﯾﺎ ﺭﺏ ﮐﺮﯾﻢ ! ﯾﮧ ﮐﯿﺎ ﻣﺎﺟﺮﮦ ﮬﮯ ﺟﻮ ﺷﺨﺺ ﺑﺪﺗﺮﯾﻦ ﺗﮭﺎ ﻭﮨﯽ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺑﮩﺘﺮﯾﻦ ﮐﯿﺴﮯ ﮬﻮﺳﮑﺘﺎ ﮬﮯ ؟ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺻﺒﺢ ﺟﺐ ﯾﮧ ﺷﺨﺺ ﺍﭘﻨﮯ ﺑﯿﭩﮯ ﮐﻮ ﮐﻨﺪﮬﮯ ﭘﺮ ﺑﭩﮭﺎﺋﮯ ﺟﻨﮕﻞ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﻧﮑﻼ ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺑﯿﭩﮯ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺳﮯ ﭘﻮﭼﮭﺎ ﺍﺑﺎ ،،، ﮐﯿﺎ ﺍﺱ ﺟﻨﮕﻞ ﺳﮯ ﺑﮍﯼ ﮐﻮﺋﯽ ﭼﯿﺰ ﮬﮯ ﺍﺱ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﮨﺎﮞ ﺑﯿﭩﺎ ﯾﮧ ﭘﮩﺎﮌ ﺟﻨﮕﻞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺑﮍﮮ ﮨﯿﮟ

ﺑﯿﭩﺎ ﺑﻮﻻ ﺍﺑﺎ ،،،، ﺍﻥ ﭘﮩﺎﮌﻭﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺑﮍﯼ ﮐﻮﺋﯽ ﺷﺌﮯ ﮬﮯ؟ ﻭﮦ ﺑﻮﻻ ﮨﺎﮞ ﺑﯿﭩﺎ ﯾﮧ ﺁﺳﻤﺎﻥ ﭘﮩﺎﮌﻭﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺑﮩﺖ ﺑﮍﺍ ﺑﮩﺖ ﻭﺳﯿﻊ ﻭ ﻋﺮﯾﺾ ﮬﮯ ﺑﯿﭩﮯ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﺍﺑﺎ ! ﺍﺱ ﺁﺳﻤﺎﻥ ﺳﮯ ﺑﮍﯼ ﺑﮭﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﭼﯿﺰ ﮬﮯ؟ ﺑﺎﭖ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﺳﺮﺩ ﺁﮦ ﺑﮭﺮﯼ ﺍﻭﺭ ﺩﮐﮫ ﺑﮭﺮﯼ ﺍﻭﺍﺯ ﻣﯿﮟ ﺑﻮﻻ ﮨﺎﮞ ﺑﯿﭩﺎ ﺍﺱ ﺁﺳﻤﺎﻥ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺑﮍﮮ ﺗﯿﺮﮮ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮔﻨﺎﮦ ﮨﯿﮟ ﺑﯿﭩﮯ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﺍﺑﺎ ! ﺗﯿﺮﮮ ﮔﻨﺎﮦ ﺳﮯ ﺑﮍﯼ ﺑﮭﯽ ﮐﻮﺋﯽ ﭼﯿﺰ ﮬﮯ؟ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﭼﮩﺮﮮ ﭘﺮ ﺍﯾﮏ ﭼﻤﮏ ﺳﯽ ﺍﮔﺌﯽ ﺍﻭﺭ ﺑﻮﻻ ﮨﺎﮞ ﺑﯿﭩﺎ ﺗﯿﺮﮮ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮔﻨﺎﮬﻮﮞ ﺳﮯ ﺑﮩﺖ ﺑﮩﺖ ﺑﮍﯼ ﻣﯿﺮﮮ ﺭﺏ ﮐﯽ ﺭﺣﻤﺖ ﺍﻭﺭ ﺍﺳﮑﯽ ﻣﻐﻔﺮﺕ ﮬﮯ

ﺍﻟﻠﮧ ﺭﺏ ﺍﻟﻌﺰﺕ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺍﮮ ﻣﻮﺳﯽ ! ﻣﺠﮭﮯ ﺍﺱ ﺷﺨﺺ ﮐﺎ ﺍﻋﺘﺮﺍﻑ ﮔﻨﺎﮦ ﺍﻭﺭ ﻧﺪﺍﻣﺖ ﺍﺱ ﻗﺪﺭ ﭘﺴﻨﺪ ﺁﯾﺎ ﮐﮧ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺑﺪﺗﺮﯾﻦ ﺷﺨﺺ ﮐﻮ ﺗﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﺑﮩﺘﺮﯾﻦ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﺑﻨﺎ ﺩﯾﺎ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍﺳﮑﮯ ﺗﻤﺎﻡ ﮔﻨﺎﮦ ﻧﺎﺻﺮﻑ ﻣﻌﺎﻑ ﮐﺮ ﺩﺋﯿﮯ ﺑﻠﮑﮧ ﮔﻨﺎﮬﻮﮞ ﮐﻮ ﻧﯿﮑﯿﻮﮞ ﺳﮯ ﺑﺪﻝ ﺩﯾﺎ ۔۔۔۔۔ ﺳﺒﻖ ﺍﭘﻨﮯ ﺭﺏ ﮐﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﺭﻭﻧﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﻋﺘﺮﺍﻑ ﮔﻨﺎﮦ ﮐﺮﻧﺎ -ﻋﺎﺟﺰﯼ ﺳﮯ ﺍﺳﮑﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﺧﻮﺩ ﮐﻮ ﺟﮭﮑﺎ ﺩﯾﻨﺎ ﺑﮩﺖ ﺑﮍﺍ ﻋﻤﻞ ﮬﮯ

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎