بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


نواز شریف اور شہباز شریف کو کس قصور کی سزا مل رہی ہے؟ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا نجی ٹی وی سے گفتگو میں انکشاف

  جمعرات‬‮ 6 دسمبر‬‮ 2018  |  20:24

مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقا ن عباسی نے کہاہے کہ وزیراعظم نے اگر کرپشن روکنی ہے تو احتساب کا عمل سب سے پہلے اپنی کابینہ سے شروع کریں ، حکومت اپنے بیانات بدل لیتی ہے ،حکمران اور وزراء کا بیان ہر کسی سے مختلف ہوتا ہے، حکومت نے تمام پالیسیوں کو واپس کرنا شروع کردیا ، نواز شریف اور شہباز شریف کا قصور ملک کی ترقی کیلئے کام ہے ، اب مہنگائی دوہرے ہندسوں میں جائے گی اور عوام کو بے پناہ تکلیف ہوگی۔

وہ بدھ کو نجی ٹی وی پروگرام

میں گفتگو کررہے تھے۔ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت اپنے بیانات بدل لیتی ہے ۔ ان کے حکمران اور وزراء کا بیان ہر کسی سے مختلف ہوتا ہے۔ کبھی یہ کہتے ہیں کہ ملک کو معاشی بحران کا سامنا ہے اور کبھی کہتے ہیں کہ اب معاشی حالات ٹھیک ہورہے ہیں۔ حکومت کو بچت کاڈھنڈورانہیں پیٹنا چاہیے۔ حکومت چھوڑی تو 16ارب ڈالرز کے زرمبادلہ تھے۔ نیا بجٹ لانے کی کوئی ضرورت نہیں تھی۔ چند ماہ میں ہر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے ان 3ماہ میں جتنا قرضہ لیا ہے وہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے زیادہ قرضہ ہے۔

حکومت نے تمام پالیسیوں کو ریورس کرنا شروع کردیا ۔ سرمایہ کار حکومت کی سوچ اور رویہ دیکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کوئی وزیر کام کرتا نظر نہیں آرہا اور نہ ہی حکومت کی کوئی سمت نظر آرہی ہے۔ اب مہنگائی دوہرے ہندسوں میں جائے گی اور عوام کو بے پناہ تکلیف ہوگی۔ ہر حکومت قرضہ لیتی ہے اور قرضہ لیے بغیر ملک کو چلانا مشکل ہوجاتا ہے۔ وزیراعظم نے اگر کرپشن روکنی ہے تو پہلے اپنی کابینہ سے شروع کریں ۔ نواز شریف اور شہباز شریف کا صرف یہی قصور ہے کہ انہوں نے ملک کی ترقی کیلئے کام کیا۔ سابق وزیراعظم نے کہا ہے کہ ہم نے کبھی گالم گلوچ کی اپوزیشن نہیں کی۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎