Android AppiOS App

بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


خیبرپختونخوا حکومت کا وزیراعظم سے مبینہ فراڈ پکڑا گیا، گزشتہ روز جس شیلٹر ہوم کا عمران خان نے افتتاح کیا یہ کس چیز کی عمارت ہے؟ ان کے جانے کے بعد اس عمارت میں کیا ہوا؟ انتہائی افسوسناک انکشافات

  ہفتہ‬‮ 15 دسمبر‬‮ 2018  |  20:27

خیبرپختونخوا حکومت نے گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان کے ہاتھوں شیلٹر ہوم کا افتتاح کروایا، اس شیلٹر ہوم کے بارے میں ایک نجی ٹی وی چینل نے رپورٹ جاری کی ہے کہ یہ شیلٹر ہوم دراصل منشیات کے عادی افراد کا بحالی مرکز ہے، وزیراعظم کی جانب سے افتتاح کے کچھ گھنٹوں بعد ہی اس شیلٹر ہوم پر تالے لگا دیے گئے، نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق صوبائی حکومت نے وزیراعظم عمران خان سے منشیات کے بحالی مرکز کو شیلٹر ہوم بتا کر افتتاح کرا دیا اور

حکومت کے اس اقدام سے منشیات کے عادی

افراد بحالی سینٹر سے محروم ہو گئے۔ رپورٹ کے مطابق صوبائی حکومت نے شیلٹر ہوم کی بندش کے حوالے سے خبر پر نوٹس لیتے ہوئے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ صوبائی حکومت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومت شیلٹر ہوم خود مانیٹر کرے گی، رپورٹ میں بتایا گیا کہ منشیات کے عادی افراد کا پندرہ روز قبل یہاں علاج کیا جاتا تھا لیکن حکومت نے پرانی عمارت کو ہی رنگ روغن کرکے مہمان خانے کی تختی لگا دی، دوسری جانب صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی کا کہنا ہے کہ

عوام کی زندگی سہل بنانے ان کے لئے زندگی کے سہولیات مہیا کرنا پاکستان تحریک انصاف اور صوبائی حکومت کے ترجیحات میں شامل ہیں، ملک کو ریاست مدینہ کی طرز پر چلانے کے لئے اور وزیراعظم عمران خان کی فلاحی ریاست کے عزم کی تکمیل کے لئے صوبائی حکومت نے بے گھر افراد کے لئے پشاور میں 5 شیلٹرہوم یعنی سرکاری مہمان خانے بنائے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے شلٹر ہوم کے قیام کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔صوبائی وزیر نے کہا کہ سرکاری مہمان خانوں میں کل 400 سے تقریبا ساڑھے چار سو افراد کے رہنے کے لیے گنجائش موجود ہے جس میں پجگی روڈ پر واقع سرکاری مہمان خانے میں 230 سے 250 جبکہ باقی چار مہمان خانوں میں 50 50- افراد کے رہائش کی گنجائش موجود ہے۔

پجگی روڈ پر واقع سرکاری مہمان خانہ میں فیملیز کیساتھ رات گزارنے کے لیے خصوصی اہتمام کیا گیا ہے جبکہ باقی مہمان خانوں میں فیملیز کے آنے کے بعد ان کو گاڑی کے ذریعے پجگی مہمان خانے میں لایا جائے گا۔ ان مہمان خانوں میں سہولیات کے بارے میں شوکت علی یوسفزئی نے کہا کہ مہمانوں کو رات کا کھانا اور ناشتہ بھی فراہم کیا جاتا ہے اس کے علاوہ سردیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے کمروں میں ہیٹر اور واش رومز میں گرم پانی کا انتظام بھی موجود ہے جب کہ مسجد اور

بلا تعطل بجلی کی فراہمی کے لئے یو پی ایس کی سہولت کا بھی بندوبست کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ سرکاری مہمان خانوں میں مہمانوں کو لانے کے لئے صوبائی حکومت کی طرف سے خصوصی بسیں چلائی جاتی ہیں جو مہمانوں کو شہر کے مختلف علاقوں سے اکٹھا کرکے لاتی ہیں اور صبح ناشتہ کرنے کے بعد اپنے کاموں پر چھوڑ آتی ہیں۔ان سرکاری مہمان خانوں میں صحت کی سہولیات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ پچگی شیلٹر ہوم میں مہمانوں کو صحت کی سہولت فراہم کرنے کے لئے ڈسپنسری بھی قائم کی گئی ہے جس میں ان کو ابتدائی طبی امداد فراہم کی جاتی ہے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ مسافروں کو سہولیات کی فراہمی اور ان کی نگہداشت کے لئے ان سرکاری مہمان خانوں میں ہر وقت وارڈن موجود رہتے ہیں۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎