بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


چیف سلیکٹر اور کوچ ایک ہونا چاہیے، مجھے کوچ بنایاجارہاہے کہ نہیں؟ مصباح الحق کا حیرت انگیز موقف سامنے آگیا

  جمعرات‬‮ 22 اگست‬‮ 2019  |  13:51

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور فٹنس کیمپ کے کمانڈنٹ مصباح الحق نے کہا ہے کہ میں نے ابھی کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کیلئے درخواست نہیں دی ابھی تک افواہیں چل رہی ہیں،لیول ٹوکورس کررکھا ہے،ہیڈ کوچ کا امیدوار بنا تو کرکٹ کمیٹی چھوڑدوں گا، چیف سلیکٹر اور کوچ ایک ہونا چاہیے، اس میں ذمہ داری کا بوجھ ضرور بڑھے گا لیکن معاملات پر نظر رکھنے میں آسانی ہوگی۔قذافی اسٹیڈیم لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مصباح الحق نے کہا کہ کوچنگ سے متعلق صرف افواہیں چل رہی ہیں، ابھی میں نے پاکستان ٹیم کی کوچنگ

style="text-align: right;">کیلئے درخواست ہی نہیں دی کیونکہ میری تمام تر توجہ کیمپ پر ہے۔ انہوں کہا کہ صوبائی ٹیموں کے لئے پول گزشتہ کارکردگی کی بنیاد پر تیار کیا گیا تھا،کوشش کریں گے کہ 3رکنی کمیٹی فہرست پر نظرثانی کرتے ہوئے میرٹ پر فیصلے کرے۔ انہوں نے کہا کہ کوچنگ اورسلیکشن کمیٹی میں سے کسی ایک کومنتخب کرنا پڑا تواس کے لئے استخارہ کروں گا۔لاہور میں جاری پری سیزن کیمپ میں کئی کھلاڑیوں کو نظر انداز کرنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ فی الحال سب سے زیادہ توجہ سینٹرل کنٹریکٹ یافتہ کرکٹرز پر دی گئی ہے،چند مزید پرفارمرز کو بھی موقع دیا گیا ہے، باقی ہائی پرفارمنس کیمپ میں بھی ٹریننگ کے لئے موجود ہوں گے،ڈومیسٹک کرکٹ میں عمدہ کارکردگی دکھانے والے کرکٹرز کی کارکردگی پر آئندہ سلیکشن کمیٹی نظر رکھے گی۔مصباح الحق کا کہنا تھا کہ قومی کرکٹرز کی فٹنس میں بہتری ضرور آئی ہے لیکن ابھی مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔رمیض راجہ کی طرف دفاعی اپروچ کی وجہ سے ہیڈ کوچ کے لئے غیر موزوں ہونے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ ہر شخص کی اپنی رائے ہے، لوگ تنقید کرتے ہیں لیکن اپنا کام جاری رکھوں گا۔


loading...

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎