بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


اب نوازشریف کی واپسی ان کا ذاتی فیصلہ ہے،برطانوی حکام کو عدالتی فیصلے سے بھی آگاہ کیا جائے گا،کسی اور ملک جانا ہوا تو کیا کرنا ہوگا؟حکومت نے بڑا اعلان کردیا

  بدھ‬‮ 20 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  13:28

وزیراعظم کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبرنے کہا ہے کہ آصف زرداری کو سہولیات کی فراہمی سے متعلق عدالتی فیصلے پر عمل کیا جائے گا۔پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کے بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی یوٹرنز کی فہرست بہت لمبی ہے، یہ ماضی میں جنہیں چور اور لٹیرے کہتے تھے آج انہی کے ساتھ بغل گیر ہیں۔شہزاد اکبر نے کہاکہ نواز شریف کے بیرون ملک جانے سے عوام کو یہ تاثر گیا ہے کہ صرف زرداری اور نوازشریف کا علاج بیرون ملک ہوسکتا ہے، ایسا ہوتا رہا تو قوم

کا

اعتبار اٹھ جائیگا۔شہزاد اکبر نے کہا کہ نوازشریف کی واپسی ان کا ذاتی فیصلہ ہے تاہم اگر وہ واپس نہ آئے تو ان کی مشکلات بہت بڑھ جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ شہبازشریف نے نوازشریف کی واپسی سے متعلق بیان حلفی دیا ہے جس میں لکھا گیا ہے کہ نوازشریف علاج کرا کے واپس آئیں گے، بیان حلفی کی خلاف ورزی پر شریف برادران عدالتوں کے بھی مجرم ہوں گے۔مشیر برائے احتساب نے کہا کہ انڈیمنٹی بانڈ کی شرط رکھنے کا مقصد نواز شریف کی وطن واپسی کو یقینی بنانا تھا، لاہور ہائیکورٹ نے اسٹامپ پیپر کے ذریعے ان کی وطن واپسی کی یقین دہانی حاصل کی ہے۔شہزاد اکبر نے کہا کہ نواز شریف سے کوئی ذاتی جنگ نہیں، انسانی ہمدردی کی بنیاد پر حکومت نے انہیں علاج کی غرض سے بیرون ملک جانے کی اجازت دی ہے۔مشیر احتساب شہزاد اکبر نے بتایا کہ برطانوی حکام سے رابطے میں ہیں اور انہیں سابق وزیراعظم کی روانگی سے متعلق آگاہ کردیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ برطانوی حکام کو عدالتی فیصلے سے بھی آگاہ کیا جائے گا، اگر نوازشریف کسی اور ملک جاتے ہیں تو اس حکومت کے علم میں بھی تمام تر تفصیلات لائی جائیں گی۔


دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎