بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


جج ویڈیو سکینڈل ، سپریم کورٹ نے اہم ترین فیصلہ سنا دیا

  منگل‬‮ 10 دسمبر‬‮ 2019  |  13:46

جج ویڈیو سکینڈل میں سپریم کورٹ نے نظرثانی درخواست نمٹا دی، نظر ثانی درخواست نواز شریف نے دائر کی تھی۔چیف جسٹس کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی۔ چیف جسٹس نے کہا نظرثانی میں جو باتیں کیں وہ عدالت پہلے مان چکی، اگر چاہتے ہیں آپ کا حق متاثر نہ ہو تو پہلی بات دوبارہ لکھ دیتے ہیں، فیصلے میں لکھا ہمارے دخل اور مداخلت کی گنجائش نہیں، عدالت نے معاملہ اسلام آباد ہائیکورٹ پر چھوڑا، قانون جانے اور اس کا کام۔درخواست گزار نے کہا دیکھنا یہ ہے پریس کانفرنس سے عدلیہ کو نقصان پہنچا یا

نہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا ویڈیو کے بارے میں قانون کی بات کی، فیصلے میں لکھا اسلام آباد ہائیکورٹ اپنا طریقہ کار اپنائے، قانون کی بات کر کے درخواستیں مسترد کر دی تھیں، کیسے تسلیم کرلیں کہ عدلیہ کو نقصان پہنچا ؟ تبصرے شروع ہوگئے کہ ہائیکورٹ کے ہاتھ باندھ دیئے گئے، یہ بات تب ہوتی ہے جب فیصلہ پڑھے بغیر تبصرے شروع ہو جاتے ہیں۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا اسلام آباد ہائیکورٹ ویڈیو سکینڈل پر فیصلہ کرنے میں مکمل آزاد ہے، فریقین کو نوٹس اس لیے نہیں کیا کہ درخواستیں منظور نہیں کیں۔ خواجہ حارث نے کہا عدالت کے سامنے کسی مقصد کیلئے آیا ہوں۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا عدالت سے جو آپ مانگ رہے ہیں، ہم پہلے ہی دے چکے۔


دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎