بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


“جہانگیر ترین کی شوگر ملز میںشریف فیملی کا کونسا قریبی رشتہ دار شیئرز ہولڈر ہے؟ حکومتی وزیر زرتاج گل وزیر کا انکشاف‎

  جمعہ‬‮ 14 فروری‬‮ 2020  |  13:58

شوگر مافیاز کے بارے میں بہت زیادہ لوگ بات کر رہے ہیں ، اس سارے معاملے پر لوگوں کی بڑی تعداد جہانگیر خان ترین اور خسرو بختیار کا نام لیتی ہے لیکن میں آپ کے پروگرام کے ذریعے لوگوں کو یہ بتانا چاہتی ہوں کہ شوگر ملز میں بڑی تعداد زرداری ، شریف فیملی اور زرداری فرینڈز کی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق

نجی ٹی وی پروگرام میں وفاقی وزیر زرتاج گل نے کہا ہے کہ پورے پاکستان میں اس وقت 82شوگر ملز ہیں جن میں 18فیصد شوگر ملز زرداری کی ہے ، 12فیصد شوگر ملزم شریف

فیملی کی جبکہ 16فیصد شوگرملزم مالکان زرداری کے قریبی دوست احباب ہیں ۔ڈیڑھ فیصد ، چار شوگر ملزم ہیں جو جہانگیر ترین اورخسرو بختیار کی ملکیت میں ہیں ، جہانگیر ترین اور خسروبختیار کی شوگر ملز میں شیئر ہولڈر مریم نواز کے سمدھی چودھری منیر بھی ہیں ۔ زرتاج گل کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین کے شوگر ملزم میں جو ورکرز کام کر رہے ہیں وہ سب بے حد خوش ہیں کیونکہ انہی سیلری وقت پر ملتی ہے ۔ ان کی شوگر ملز کا ڈیٹا نکلوا لیں آپ کو کوئی بھی ایسا شخص نظر نہیں آئے گا جو یہ شکایت کرتا ملے کہ انہوں نے اپنا فائدہ حاصل کر لیا لیکن ورکرز تک نہیں پہنچایا ۔ وفاقی وزیر زرتاج گل کا مزید کہنا تھا کہ لوگوں کو یہ بات پتہ نہیں ہے ، 82شوگر ملز کا فائدہ کون لوگ اٹھا رہے ہیں ، کونسا مافیا ہے جو فائدہ اٹھا رہا ہے اس میں جو بھی شخص ذمہ دار ہے یہ اس کی غلط فہمی ہے کہ وہ کوئی فائدہ اٹھا سکتا ہے یا الزام لگا سکتا ہے ۔کلیکٹر یا ڈپٹی کلیکٹر لیول ذمہ داران تھے پہلی دفعہ ملکی تاریخ میں ایسا ہوا کہ تحریک انصاف نے کرپٹ افسران کو آٹے بحران کے ذمہ داروں کو فارغ کیا ہے ۔لوگوں کو دکھانے کیلئے چھوٹے موٹے لوگوں کو فارغ کرنا بڑا آسان ہے ۔قصور ڈی پی او کرے آپ فارغ سپاہی کو کر دیں تو یہ کوئی انصاف نہ ہوا ۔


دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎