6382w-768x401

چین کیوں ہم سے آگے ہے

  جمعرات‬‮ 12 اکتوبر‬‮ 2017  |  20:49

آج سے بیس سال پہلے تک چین معا شرتی کرپشن میں دنیا کے بد ترین ممالک میں شمار ہوتا تھا،اس وقت کہا جاتا تھا آپ اگر چینی ہیں اور سرکاری ملازم ہیں تو آپ کی ایمانداری کی قسم نہیں کھائی جا سکتی‘بیس سال پہلے تک چین کے وزرا ء ’میئر ز اور آرمی آفیسر ز کے فریجوں‘واشنگ مشینوں اور مائیکرو ویوز تک سے رشوت کے پیسے نکلتے تھے ۔۔لیکن پھر چین نے کرپشن کے خلاف کڑے اصول بنائے چین نے کرپشن ،رشوت ستانی اور اقربا ء پر وری کی سزا سزا ئے موت طے کر دی اور یہ اس معاملے میں کسی سے رعایت نہیں کرتے تھے ۔حکومت نے حکمرا ن جماعت کمیونسٹ پارٹی کے سات لاکھ کارکنوں کی سکر وٹنی کی اور۔۔ان میں سے ڈیڑ ھ لاکھ کرپٹ کارکنوں کو پارٹی سے فارغ کردیا گیا ۔حکومت نے کابینہ کے

نے کابینہ کے نے کابینہ کے وزرا ء، بیجنگ اور شنگھائی کے میئر ز اور فوج کے انتہائی اعلیٰ عہدیداروں تک کو کرپشن ثابت ہونے پر گولی ماردی ۔یہ سلسلہ آج تک جاری ہے ،ابھی چند دن پہلے چین کے ایک سابق ریلوے منسٹر کو کرپشن کی وجہ سے موت کی سزا دی گئی سزائے موت سے قبل وہ دس سال قید بھی کاٹیں گے ۔آپ اس قانون کا فائدہ ملا حظہ کیجئے ۔کرپشن کی وجہ سے چین میں اسی کی دہا ئی تک تمام تر معاشی ترقی کے با و جود کوئی ارب پتی نہیں تھا لیکن جب احتساب ہوا ،کرپٹ لوگوں کو سزا ہوئی تو آج چین میں 122ارب پتی موجود ہیں اور یہ تعداد امریکا کے بعد دوسرے نمبر پر آتی ہے ،دنیا میں ہر وہ قوم ختم ہوجاتی ہے جو کنفلکٹ کا شکار ہوتی ہے۔ یا جس مین کرپشن عام ہوتی ہے او ر چین ان دنوں بیماریوں سے نکل گیا ہے،اس نے باہمی تنازعے بھی ختم کر دیئے ہیں اور کرپشن بھی ،چین کے صوبے حنان میں کرپشن کے خلاف کچھ عرصہ قبل ایک قانون پاس ہوا ،صو بائی حکومت نے تمام سرکاری ملا زموں پر پابندی لگا دی۔

یہ کسی شخص سے بر تھ ڈے گفٹ وصول نہیں کرسکتے ،یہ پابندی اینٹی گرا فٹ کمیشن نے لگائی ،اس حکم کے مطابق جو شخص تحا ئف کو ذا تی فعل قرار دے گا اسے اپنے عہدے سے مستعفی ہونا پڑے گا بصورت دیگر اسے گرفتار کر لیا جائے گا ،یہ چین کے ایک صوبے کا قانون ہے،ہمارا ٹوٹل جی ڈی پی 240بلین ہے جبکہ چین کے صرف اس صوبے کا جی ڈی پی 300بلین ڈالر ہے اور فرق صرف اور صرف ایسے قوانین کی وجہ سے ہے۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎