بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ

سی پیک فنڈز کہاںجا رہے ہیں ،ہمیں معلوم ہے کہ نواز شریف کے اتحادی حاصل بزنجو سینیٹر کیسے منتخب ہوئے؟ وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے حساب برابر کر دیا، سینٹ میں تقریر کا جواب دیتے ہوئے تہلکہ خیز انکشاف کر ڈالا

  منگل‬‮ 13 مارچ‬‮ 2018  |  17:39

حاصل بزنجو جمہوریت کے چیمپئن بنتے ہیں ، اقتدار میں آنے کے بعد بلوچستان کے حقوق کیلئے کیا کام کیا؟میری عادت نہیں کہ میں کسی کی ذات پر کیچڑ اچھالوں، حاصل بزنجوکی پارٹی نے 2008کے الیکشن میں بائیکاٹ کیا وہ سینیٹر کیسے بن کر آگئے، جب ہمارے 6سینیٹر منتخب ہوئے تو اس وقت یہی نیت تھی کہ چیئرمین سینٹ بلوچستان سے ہونا چاہئے، وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو کی میڈیا سے گفتگو۔ تفصیلات کے مطابق سینٹ میں چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینٹ کے الیکشن کے بعد نیشنل پارٹی کے میر حاصل خان بزنجو کی تقریر پر ردعمل دیتے ہوئے وزیراعلیٰ بلوچستان

ہوئے وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو نے میڈیا نمائندوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہا ہے کہ میری عادت نہیں کہ میں کسی کی ذات پر کیچڑ اچھالوں، میر حاصل بزنجو جمہوریت کے چیمپئن بنتےہیں، اقتدار میں آنے سے قبل کہتے تھے کہ اسلام آباد میں ہماری بات نہیں سنی جاتی، میں ان سے یہ پوچھنا چاہتا کہ اقتدار میں آنے کے بعد انہوں نے بلوچستان کے عوام کیلئے کیا کیا ہے۔ عبدالقدوس بزنجو کا کہنا تھا صل بزنجوکی پارٹی نے 2008کے الیکشن میں بائیکاٹ کیا وہ سینیٹر کیسے بن کر آگئے، جب ہمارے 6سینیٹر منتخب ہوئے تو اس وقت یہی نیت تھی کہ چیئرمین سینٹ بلوچستان سے ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سی پیک کے حامی ہیں تاہم فنڈنگ اور دوسرے امور پر تحفظات ہیں جن کا دور کیا جانا ضروری ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز سینٹ میں چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینٹ کے انتخاب کے بعد خطاب کرتے ہوئے میر حاصل خان بزنجو کا کہنا تھا کہ بلوچستان سے تعلق رکھنے والے سینیٹر میر حاصل خان بزنجو نے کہا ہے کہ آج عملی طورپر ثابت ہوچکا بالادست طاقتیں پارلیمنٹ سے طاقتور ہیں، مجھے یہاں بیٹھے ہوئے شرم آتی ہے ، پارلیمنٹ بینظیر اور بھٹو تب جیتتے جب رضا ربانی کو چیئرمین بناتے ،اس بلڈنگ کو گرانے کے بعد بلوچستان کا نام لیا جارہا ہے، آپ نے کے پی کے اسمبلی کو منڈی بنا دیا، اس ملک اور جمہوریت کو چلنے دیں۔پیر کو سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے

میر حاصل بزنجو نے کہا کہ آج پارلیمنٹ مکمل طور پر ہار چکی ہے ٗ آج عملی طور پر ثابت ہوا کہ بالادست طاقتیں پارلیمنٹ سے زیادہ بالادست ہیں، آج شہید بینظیر بھٹو نہیں جیتیں ٗ ذوالفقار علی بھٹو نہیں جیتے بلکہ بالادست طبقہ جیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ آج اس بالادست طبقے نے اس ہاؤس کو پاکستان میں منڈی بنا کر ثابت کردیا کہ وہ پارلیمنٹ کو منڈی بھی بنا سکتا ہے جسے ہم پارلیمنٹ کہتے ہیں۔میر حاصل بزنجو نے کہاکہ آج مجھے یہاں بیٹھتے ہوئے شرم آتی ہے،

آج پارلیمنٹ جیت جاتی، بینظیر بھی جیت جاتیں اور بھٹو بھی جیت جاتا اگر رضا ربانی کو چیئرمین بنایا جاتا، لیکن آپ لوگوں نے رضا ربانی کو کہا کہ وہ مسلم لیگ (ن) کا نمائندے ہیں۔اس موقع پر چیئرمین سینیٹ نے میر حاصل بزنجو کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آج صرف مبارک باد دیں تقریر کے لیے بہت وقت ہے تاہم میر حاصل بزنجو نے کہا کہ آج میں نے تقریر نہیں کی تو زندگی بھر تقریر نہیں کروں گا۔انہوں نے اپنی تقریر جاری رکھتے ہوئے کہا کہ آج کس کو اور کس بات کی مبارک باد دوں ٗآج اس ہاؤس کا منہ کالا ہوگیا ہے

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎