بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


7 Habits of Highly Effective People

  منگل‬‮ 15 مئی‬‮‬‮ 2018  |  11:44

Author: Stephen Covey From: 7 Habits of Highly Effective People بہت سال پہلے کی بات ہے، ایک لکڑ ہارا ایک ٹمبر کی فیکٹری گیا اور ان سے جاب کے لیے درخواست کی۔ کیونکہ لکڑہارے کی صحت بہت اچھی تھی اور ایک مضبوط اٹھا ن والا آدمی تھا، ٹمبر فیکٹری کے باس نے اسے جاب دے دی، وہ پہلے دن جنگل گیا اور اٹھاراں درختوں کے تنے کاٹ کر لے آیا۔ باس نے دیکھا تو حیران رہ گیا اور اس نے لکڑہارے کو بہت شاباش دی ، اگلے دن لکڑہارا اور جوش اور ولولے کے ساتھ جنگل کی جانب گیا اور واپس لوٹا

تو اس نے پندراں درختوں کے تنے کاٹے تھے۔ وہ خود بھی اپنی کارکردگی سے نا خوش تھا۔ تیسرے دن سوچا کہ آج ضرور اور کہیں زیادہ درخت کاٹوں گا مگر آج کے دن تو وہ صرف دس ہی کاٹ پایا۔ اس نے اپنےباس سے بولا میں بے حد شرمندہ ہوں پتہ نہیں کیا ہو گیا ہے مجھے تو ہر گزرتے دن کے ساتھ بہتر ہونا چاہیے ہے اور میں ہوں کہ میری کاکردگی خراب ہو تی جا رہی ہے۔ باس میں شاید اب پہلے جتنا طاقت ور نہیں ہوں؟باس نے بولا: تم نے آخری دفعہ اپنی کلہاڑی کب تیز کی تھی؟ لکڑہارا بولا: او۔۔۔میں اپنے کام میں اتنا مصروف تھا کہ مجھے اس کا تو موقع ہی نہیں ملا اورنہ ہی مجھے یاد رہا تھا۔ سٹیفن آر کووی آگے اپنی اس کہانی کو ایکسپلین کرتا ہے کہ در اصل ہماری زندگی کا بھی یہی ماجرہ ہے۔ ہم اکثر اوقات اتنے مصروف رہتے ہیں کہ اپنی کلہاڑی کو تیز کرنا بھول جاتے ہیں۔ آج کل ایسا دور ہے کہ ساری دنیا بہت تیز رفتار زندگی گزار رہی ہے اور ایسے لگتا ہے جیسے کوئی بھی اصل میں خوش نہیں ہے۔ بھلا کبھی سوچا ہے کہ ایسا کیوں ہے؟ کیا یہ ممکن ہے کہ ہم زندگی میں شارپ رہنا بھول گئے ہیں۔ محنت اور کام کاج مین کوئی حرج نہیں ہے مگر اتنا مصروف رہنا کہ ہم اپنے خالق ، اپنی فیملی اور اچھی کتابوں کے لیے کوئی وقت وقف نہ کر سکیں، یہ سراسر احمقانہ روش ہے۔ ہم سب کو آرام کے لیے وقت درکار ہوتا ہے۔ سوچنے سمجھنے کے لیے۔ غور و فکر کے واسطے، مراقبے کے لیے۔ سیکھنے اور بہتر انسان بننے کے لیے۔ اگر ہم اپنے لیے یہ خاص وقت نکالنا بند کر دیں گے کیونکہ کام بہت زیادہ ہے اور وقت کم ،تو ہماری بھی کلہاڑی تیز نہیں رہے گی اور ہم اپنی کارکردگی کبھی بھی بہتر نہیں کر سکیں گے۔یہاں تک جو کچھ آپ نے پڑھا وہ سب سٹیفن آر کووی کی اپنی تحریر تھی اور سٹیفن کی کتاب سے اقتباس تھا ۔وہ کتاب ۔۔۔سیون ہیبٹس آف ہائلی افیکٹوو پیپل ۔۔۔دنیا بھر میں نہایت مشہور اور مقبول ہے بلکہ ایم بی اے کے تقریبا تمام کالج یونیورسٹیوں میں یہ دنیا بھر کے نصاب کا اہم حصہ ہے۔ سٹیفن ایک ایسا رائٹر تھا جس کو ساری دنیا نے سراہا ہے اور کامیابی نے در حقیقت اس کے قدم چومے ہیں۔ کوئی بھی ایسا انسان جو اپنے تجربے کے مشاہدے سے آپ کو کوئی بھی سبق دے، اس کی بات کو بہت انہماک کے ساتھ سننا اور دل پر نقش کر لینا چاہیے کیونکہ اسی میں ہماری بہتری پنہاں ہے۔ 

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎