بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ

لنڈا بازار کی حقیقت

  منگل‬‮ 15 مئی‬‮‬‮ 2018  |  18:35

کیا آپ جانتے ہیں کہ استعمال شدہ کپڑوں' جوتوں اور پرانی دوسری اشیاء کے بازار کو "لنڈا بازار" کیوں کہا جاتا ہے ؟ اس کے متعلق مشہور ہے کہ ایک برطانوی خاتون کا نام Linda لینڈا تھا .  وہ بہت رحم دل تھی اسے غریبوں سے خاص ہمدردی تھی اس نے غریبوں کے لیے کچھ کرنے کا سوچا.چونکہ اس کے پاس اپنے وسائل کم تھے اس لئے اس نے اپنے دوستوں سے عطیات دینے کی درخواست کی. اس کے دوستوں نے اسے کچھ پرانے جوتے کپڑے وغیرہ دیئے. جو اس نے غریبوں کے لیے ایک اسٹال پہ سجائے اور غریب

وہاں سے وہ کپڑے مفت لینے لگے. دوسرے لوگوں کو بھی اس کی ترغیب ہوئی اور ان لوگوں نے بھی اپنے پرانے کپڑوں اور جوتے وغیرہ لینڈا کو دینے شروع کر دئیے. اور اس کا یہ اسٹال کافی مشہور ہو گیا .جو بعد میں ایک مارکیٹ کی شکل اختیار کر گیا.آخر اس جگہ کو لینڈا مارکیٹ کہا جانے لگا . جو درحقیقت غریبوں کی مارکیٹ تھی. انگریزوں کی برصغیر آمد کے ساتھ ہی انگریزوں کی پرانی اشیاء جو بے کار ہو جاتی تھیں. سستے داموں میں ہند و پاک میں بک جاتی تھیں. گویا انگریز جاتے ہوئے وراثت میں ہمیں لینڈا مارکیٹ دے گئے جسے ہم لنڈا بازار کہتے ہیں. جو ہمارے ہاں مقامی زبان میں اس کا بگڑا ہوا نام ہے..!! اس کہانی کے اندر بھی ہمارے لئے ایکسبق موجود ہے. لینڈا ایک غیر مسلم ہو کر بھی خیر خواہی کے جذبے سے سرشار تھی. اور آج ہم اکثر مسلمان جو اسلام کے نام لیوا ہیں. اپنے غریب بہن بھائیوں کا خیال تک نہیں رکھتے .حالانکہ ہمارے دین اسلام کے نام مطلب ہی خیر خواہی ہے. اس لئے آپ تمام بہنوں اور بھائیوں سے گزارش ہے کہ اپنے اردگرد خاندان 'گلی اور محلے کے لوگوں کی خبر گیری رکھا کریں. اور کوئی غریب ہے اور حقدار ہے تو اس کی ضرور مدد کیا کریں ان شاءاللہ یہ مدد کرنا آپ کا رائیگاں نہیں جائیگا. کیونکہ ایک کے بدلے سات سو گنا سے بھی زیادہ کا اجر ہے .

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎