بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


تُو تَو خود آگاہِ راز ہے

  بدھ‬‮ 23 مئی‬‮‬‮ 2018  |  10:33

بابا جیسا سُنا تھا، ویسا ہی پایا. تُو تَو خود آگاہِ راز ہے.ایک بار ایک درویش علّامہ اِقبالؒ کے پاس آیا. آپؒ نے حسب عادت اُس سے دعا کی درخواست کی. پوچھا، "دولت چاہتے ہو؟" علّامہؒ نے جواب دیا: "میں درویش ہوں. دولت کی ہوَس نہیں." پوچھا "عِز و جاہ مانگتے ہو؟" جواب دیا: "وہ بھی خدا نے کافی بخش رکھی ہے." پوچھا "تو کیا خدا سے ملنا چاہتے ہو؟" جواب دیا "سائیں جی کیا کہہ رہے ہو. میں بندہ وہ خدا. بندہ خدا سے کیوں کر مِل سکتا ہے؟ قطرہ دریا میں مل جائے تو قطرہ نہیں رہتا. نابود

ہو جاتا ہے. میں قطرے کی حیثیت میں رہ کر دریا بننا چاہتا ہوں." یہ سن کر اُس درویش پر خاص کیفیت طاری ہوئی. بولا:" بابا جیسا سُنا تھا، ویسا ہی پایا. تُو تَو خود آگاہِ راز ہے. تُجھے کسی کی دعا کی کیا ضرورت؟ "کہاں سے سیکھی ھے , اقبال, تو نے یہ درویشی کہ چرچا بادشاھوں میں ھے تیری بے نیازی کا(حوالہ: ذکرِ اِقبالؒ از عبدالمجید سالک)

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎