بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


اللہ والوں کا کام

  منگل‬‮ 12 جون‬‮ 2018  |  11:37

ایک مرتبہ بابافریدؒ کا ایک مرید آپؒ کے پاس آیا‘ وہ لوہار کا کام کیا کرتا تھا‘ آپؒ کےلئے خاص قینچی بنا کر لایا‘ خدمت مبارکہ میں حاضر ہوتے ہی عرض کرنے لگا‘ باباجی یہ میں اپنے رزق حلال میں سے آپ کےلئے ایک تحفہ لایا ہوں۔ باباجی نے جب قینچی دیکھی تو مسکرا دیئے اور فرمایا بیٹا درویش تحفہ رد نہیں کیا کرتے البتہ جب اگلی مرتبہ آنا ہو تو سوئی لے کر آنا‘ جب وہ مرید اگلی مرتبہ حاضر ہوا تو سوئی لے کر آیا‘ آپ کی خدمت میں پیش کی تو آپ نے فرمایا اس

مرتبہ ہم نے تمہارا تحفہ خوشی سے قبول کیا اور پسند

بھی کیا کیونکہ قینچی کا کام کاٹنا اور سوئی کا کام سینا ہوتا ہے‘ درویش کاٹنے کا نہیں سینے کا کام کرتے ہیں‘ درویشوں کا کام محبت و الفت کے رشتوں کی بنیاد رکھنا ہوتا ہے۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎