بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ

عرب باشندے بھنڈی زیادہ استعمال کیوں کرتے ہیں؟ یہ سبزی انہیں کیوں پسند ہے ؟ صرف 4بھنڈیاں اور آپ پھر سے جوان ، حیرت انگیز جادوئی نسخہ

  جمعرات‬‮ 12 جولائی‬‮ 2018  |  13:28

سبزیاں اپنے اندر بے پناہ فوائد کی حامل ہیں اور انسانی صحت پر نہایت مفید اثرات مرتب کرتی ہیں۔ کھانے کے ساتھ ساتھ سبزیوں کا جسم پر بیرونی استعمال بھی نہایت فائدہ مند ہے۔ آج ہم یہاں آپ کو بھنڈی کا پیسٹ بنا کر اپنی جلد کو جوان اور چہرے کی جھریوں کو ختم کرنے کا طریقہ بتانے جا رہے ہیں۔ اس نسخے کو بنانے کیلئے آپ کو درج ذیل اجزا درکار ہونگے۔ بھنڈیاں چار عدد،لیموںنصف عدد، پانی ایک کپ۔ نسخہ بنانے کیلئے ایک برتن میں پانی ڈال کر بھنڈیاں اس میں ڈال دیں اور ابال آنے تک بھنڈیوں کو

میں پکتا رہنے دیں۔ ابال آنے کے بعد بھنڈیاں پانی سےنکال کر ان کا پسٹ بنا لیں اور اس پیسٹ میں چند قطرے لیموں کے شامل کر کے اسے اچھی طرح مکس کر لیں۔ اس پیسٹ کو چہرے پر جھریوں کی جگہ یعنی چہرے پر جہاں جھریاں زیادہ نمایاں ہوتی ہیں وہ چہرہ اور آنکھوں کے گرد جگہ ہے اس پر روزانہ مساج کریں اور 20منٹ سے لے کر آدھا گھنٹے تک لگا رہنے دیں اور بعد میں سادہ پانی سے دھو لیں۔بھنڈیوں کا موسم رہنے تک آپ اس کو روزانہ استعمال کر سکتے ہیں۔ اس پیسٹ کے پہلے ہی استعمال سے آپ کو فرق نمایاں پتہ چل جائے گا جبکہ روزانہ کا استعمال آپ کو آپکی عمر سے 10سال چھوٹا بنا دے گا یعنی آپ کم عمر نظر آئینگے۔ یہاں یہ معلومات جان کر بھی آپ حیران رہ جائیں گے کہ عرب شہری بھنڈیوں کو بہت پسند کرتے ہیں اور سعودی عرب میں بھنڈیوں کا سوپ بنا کر گرمیوں میں پیا جاتا ہے۔ اس کی وجہ سے بھنڈی کی تاثیر ٹھنڈی ہونا بھی ہے تاہم بھنڈی انسانی جلد پر نہایت مفید اثرات مرتب کرتی ہے اور آپ کی جلد کو بڑھتی ہوئی عمر کے اثرات سے بچانے میں نہایت کارآمد ہے۔آپ ہر عمر میں ذہنی اور جسمانی طور پر اسمارٹ رہنا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں تو یہ خواہش تو ہر شخص کی ہوتی ہے مگر ایسا ممکن چند لوگ ہی کرپاتے ہیں۔روزمرہ کی مصروفیات اکثر افراد کو ذہنی صلاحیتوں اور جسمانی مضبوطی سے آہستہ آہستہ محروم کرسکتی ہیں جبکہ اس سے بچنے کے لیے کچھ کوششوں کی ہی ضرورت ہوتی ہے۔ درحقیقت یہ کوئی ایسا مشکل کام بھی نہیں، آپ چند عام سی عادتیں اپنا کر خود کو ہر عمر میں اسمارٹ رکھ سکتے ہیں۔ درج ذیل میں ایسی ہی چند عام سی عادتیں بیان کی گئی ہیںجو آپ کو ایک اسمارٹ فرد بنانے میں مدد فراہم کرتی ہیں۔ تیز روشنی کا استعمال جی ہاں یہ درست ہے، اسمارٹ شخصیت بننے میں ایک آسان طریقہ لائٹس کو روشن کردینا ہے۔ مشی گن اسٹیٹ یونیورسٹی کی ایک حالیہ تحقیق میں چوہوں کو تیز روشنی میں رکھا گیا تو ان کی ٹاسک کی اہلیت نمایاں حد تک بہتر ہوگئی، جبکہ مدھم روشنی سے وہ دماغ کے یاداشت اور سیکھنے کے حصے ہیپوکیمپسکی 30 فیصد گنجائش سے محروم ہوگئے۔ محققین کا کہنا تھا کہ بیشتر افراد اس بات کا احساس نہیں کرپاتے کہ روشنی ان کے جسم پر کیا حقیقی اثر مرتب کرتی ہے۔ مخصوص روشنیاں ذہن کو چوکنا، توجہ اور دماغی کارکردگی کو بڑھانے میں مدد دے سکتی ہیں۔ قدرتی مناظر دیکھیں کیا قدرت دماغ کے لیے کرشماتی دوا ہے؟ لگتا تو ایسا ہی ہے۔ یوٹاہ یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہقدرتی مناظر میں گھومنا مسائل حل کرنے والی صلاحیت کو 50 فیصد تک بہتر کرسکتا ہے۔ محققین کے مطابق قدرتی مناظر میں گھومنا توجہ کے سرکٹس میں تنزلی ختم کردیتا ہے جس سے تخلیقی اور مسائل حل کرنے کی اہلیت بہتر ہوتی ہے۔ ایک اور تحقیق میں بتایا گیا کہ قدرتی مناظر کی تصاویر کو دیکھنا ہی توجہ کی صلاحیت بڑھاتا ہے۔ جسمانی سرگرمیاں جسمانی طور پر متحرک رکھناجسم کے ساتھ دماغ کے لیے بھی فائدہ مند ہوتا ہے، ایک تحقیق کے مطابق ورزش کا صرف ایک سیشن نیوروکیمیکلز تبدیلیوں کا باعث بنتا ہے جس سے دماغی افعال میں بہتری آتی ہے۔ محققین کا کہنا تھا کہ کچھ دیر کی ورزش بھی یاداشت اور سیکھنے کی صلاحیتوں میں اضافہ کرتی ہے، جس کی ممکنہ وجہ دماغ میں آکسیجن کے بہاؤ میں اضافہ ہے۔ اسی طرح ورزش جسم کی دماغ میں پیداہونے والے فضلے کو خارج کرنے کی اہلیت بھی بڑھتی ہے۔ سورج کی روشنی بھی مددگار گھر سے باہر نکلنا بھی دماغی صلاحیت کے لیے کنجی ثابت ہوسکتا ہے اور اس کی وجہ ہے وٹامن ڈی۔ اس وٹامن کی زیادہ مقدار جسم میں بننے والے دماغی افعال کے ساتھ ساتھ توجہ اور معلومات کے تجزیے کی رفتار بھی بہتر کرتی ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق وٹامن ڈی کا استعمال یاداشت اور سیکھنے کےٹاسک میں کارکردگی کو بڑھاتا ہے۔ نیند یہ تو سب کو معلوم ہے کہ اگر نیند پوری نہ ہو تو دماغ پر دھند سی چھا جاتی ہے، مگر کیا یہ جانتے ہیں کہ نیند کس طرح دماغ کو کام کرنے میں مدد دیتی ہے؟ روچسٹر یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ نیند کے دوران دماغی خلیات کے ارگرد موجود سیال زہریلے پروٹین کو خارج کرتا ہے جو بیداری کے دوران اکھٹے ہوتے ہیں۔ اچھی نیند ذہنی طور پر زیادہ چوکنا بناتی ہے،توجہ، مسائل حل کرنے اور فیصلہ سازی کی صلاحیتوں کو بہتر کرتی ہے، سوچنے کی رفتار تیز، منطقی سوچ اور یاداشت میں مدد دیتی ہے۔

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎