بہترین زندگی کے راز, نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ

جہانگیر ترین کے جہاز نے مسلم لیگ ن کا بھٹہ ہی بٹھا ڈالا شہباز شریف اپنے شیروں کی راہ ہی تکتے رہ گئے، ن لیگ میں بڑی بغاوت ایک یا دو نہیں بلکہ کتنے نو منتخب لیگی باغی ہو گئے

  بدھ‬‮ 1 اگست‬‮ 2018  |  17:50

شہباز شریف پارلیمانی اجلاس میں اپنے شیروں کی راہ تکتے رہ گئے، 14لیگی باغی، نو منتخب اراکین کے بلائے گئے اجلاس میں 109ہی حاضر ہوئے، بار بار فون مگر کسی نے اٹھانے کی زحمت ہی گوارا نہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق شہباز شریف اپنے شیروں کی راہ تکتے رہ گئے ہیں اورپارلیمانی اجلاس میں نو منتخب اراکین میں سے صرف 109ہی حاضر ہوئے ہیںجبکہ 14اراکین نے بغاوت کر دی ہے اور اس حوالے سے قومی اخبار کی رپورٹ کے مطابق ممکنہ طور پر یہ 14اراکین مسلم لیگ ن کے فارورڈ بلاک کے طور پر سامنے آتے ہوئے تحریک انصاف کی

گیمز میں ایوان میں مدد کرتے ہوئے حکومت بنانے میں کلیدی کردار ادا کرینگے جبکہ اخباری رپورٹ کے مطابق ان اراکین کو شہباز شریف بار بار فون کرتے رہےتاہم ان کی جانب سے فون اٹھانے کی زحمت بھی گوارا نہیں کی گئی۔ واضح رہے کہ مرکز اور پنجاب میں نمبر گیمز کیلئے عمران خان کی جانب سے خصوصی ٹاسک سونپے جانے کے بعد جہانگیر ترین ، علیم خان ، چوہدری سرور اور محمود الرشید سرگرم عمل ہیں جو کہ نہ صرف آزاد امیدواروں سے رابطے کر رہے ہیں بلکہ نمبر گیمز میں سبقت کیلئے مسلم لیگ ن کے نو منتخب اراکین سے بھی رابطے میں ہیں جبکہ اس حوالے سے ان کی معاونت چوہدری پرویز الٰہی بھی کر رہے ہیں۔واضح رہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے مرکز میں بھی سادہ اکثریت کیلئے 172کی تعداد کا ہونا ضروری ہے جبکہ پنجاب میں تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کی حاصل کردہ نشستوں میں بھی زیادہ فرق نہیں اور اس موقع پر آزاد اراکین کے علاوہ مسلم لیگ ق بھی اہمیت اختیار کر چکی ہے جبکہ کئی میڈیا رپورٹس کے مطابق قیادت سے ناراض کئی مسلم لیگی نو منتخب اراکین فارورڈ بلاک کی صورت میں بھی سامنے آسکتے ہیں

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎