بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


سوشل میڈیا پر کورونا کیسز و اموات بارے جھوٹی خبروں کا طوفان،پمز ہسپتال کے جعلی لیٹر پیڈ پر جھوٹی خبر وائرل،اصل حقیقت کیا ہے ؟ ڈاکٹر منہاج سب سامنے لے آئے

  ہفتہ‬‮ 23 مئی‬‮‬‮ 2020  |  6:51

سوشل میڈیا پر کورونا کیسز و اموات بارے جھوٹی خبروں کا طوفان،سوشل میڈیا پر پمز ہسپتال کے جعلی لیٹر پیڈ پر جھوٹی خبر وائرل ہوگئی ۔ تفصیلات کے مطابق جھوٹی خبر میں پمز ہسپتال میں کورونا سے متعدد ہلاکتوں کا دعویٰ کیا گیا ہے،سوشل میڈیا پر پمز ہسپتال میں کورونا مریضوں کی لاشوں کے ڈھیر لگنے کا دعویٰ کیا گیا ۔

پمز ہسپتال انتظامیہ نے سوشل میڈیا پر زیرگردش خبر پر وضاحتی بیان میں کہاگیاکہ سوشل میڈیا پر ہسپتال بارے خبر جھوٹی،گمراہ گن و بے بنیاد ہے ،مذموم عناصر نے جھوٹی خبر کیلئے اسپتال کا جعلی لیٹرپیڈ

استعمال کیا ہے ۔ ڈاکٹر منہاج السراج نے کہاکہ پمز انتظامیہ سوشل میڈیا پر چلنے والی خبر کی تردید کرتی ہے، پمز میں کورونا مریضوں کی صورتحال معمول پر ہے، پمز ہسپتال میں کورونا کی کسی دوسری قسم کا مریض زیرعلاج نہیں، ہسپتال میں کوویڈ 19 کے مریض زیرعلاج ہیں۔نائب سربراہ پمز نے کہاکہ پمز میں کورونا کے 32 مریض زیرعلاج ہیں، پمز میں کورونا کے مریضوں کیلئے وافر طبی سہولیات دستیاب ہیں، پمز انتظامیہ جھوٹی خبر پھیلانے والوں کے خلاف قانونی چارہ جوئی کر رہی ہے، پمز ہسپتال نے قانونی کارروائی کیلئے ایف آئی اے کو درخواست دیدی ہے، شہری سوشل میڈیا پر چلنے والی من گھڑت خبروں پر یقین نہ کریں، شہری سوشل میڈیا پر ہسپتال بارے خبروں کی پمز انتظامیہ سے تصدیق کریں۔


انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎