بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


گیس ہے یا میڈیسن ! اب پورے دن میں بس ایک بار گیس ملا کرے گی عوام تیاری کر لے ٹائم ٹیبل جاری

  منگل‬‮ 22 ستمبر‬‮ 2020  |  10:45

موسم سرما کے آغاز سے قبل ہی عوام کو بری خبر سنا دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق سوئی ناردرن نے موسم سرما سے قبل ہی گیس قلت کی بری خبر سنا دی ہے ۔ نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سردیوں سے قبل لاہوریوں کو گیس پورے دن میں صرف کھانا پکانے کے وقت ملے ۔کمپنی نے اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ گیس کی

قلت کے باعث 24لاکھ صارفین کو گیس کے کنکشن نہیں دیئے جا سکے ، کمپنی نے بتایا ہے کہ ہر سال چار لاکھ کنزیومر کا اضافہ ہوتا ہے انہیں کنکشن

دیئے جانے کی وجہ سے گیس کی کھپت میں اضافہ ہو رہا ہے جبکہ کمپنی کو مطلوبہ مقدار کے تحت گیس پیدا ہورہی جس کی وجہ سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ کمپنی نے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال میں بھی ستائیس لاکھ کے قریب درخواست التوا کا شکار ہیں، بڑھتی قلت کے باعث نہ انہیں ڈیمانڈ نوٹس دیئے گئے ہیں اور نہ کوئی کنکشن کیا گیا ہے ۔ دوسری جانب وفاقی وزیر عمر ایوب نے کہا ہے کہ اگلی سردیوں میں بھی گیس لوڈ شیڈنگ رہے گی ،سندھ سے نکلنے والی گیس میں سے ایک ارب 56کروڑ مکعب فٹ یومیہ گیس سندھ میں ہی استعمال ہوتی ہے ،مقامی گیس پیداوار کم اورطلب بڑھ رہی ہے،گیس قلت سے متعلق تمام صوبوں نے مل کر فیصلہ کرنا ہے ،اگلے سال تک سندھ کے پاس بھی کسی کو دینے کے لئے گیس نہیں ہو گی ،سندھ کی اپنی ضرورت پوری نہیں ہو گی ۔ پیر کو سینیٹ کی قائمہ کمیٹی پٹرولیم کا اجلاس محسن عزیز کی زیر صدارت اجلاس ہوا ۔ سینیٹر میر کبیر شاہی نے کہاکہ گیس تقسیم سے متعلق آئین کے آرٹیکلز 158اور 172پر عملدرآمد کیا جائے ۔ انہوںنے کہاکہ بلوچستان اور سندھ سے گیس نکلے اور عوام کو نہ ملے احساس محرومی بڑھے گا ۔ انہوںنے کہاکہ گیس تقسیم سے متعلق آئین کے آرٹیکلز پر عملدرآمد نہیں ہو رہا ۔ وزیر توانائی عمر ایوب نے کہاکہ سندھ سے نکلنے والی گیس میں سے ایک ارب 56کروڑ مکعب

فٹ یومیہ گیس سندھ میں ہی استعمال ہوتی ہے ،سندھ کی صرف 26کروڑ دس لاکھ مکعب فٹ یومیہ گیس پنجاب کو جاتی ہے اگلی سردیوں میں بھی گیس لوڈ شیڈنگ رہے گی ۔عمر ایوب نے کہاکہ مقامی گیس پیداوار کم جبکہ طلب بڑھ رہی ہے ۔عمر ایوب نے کہاکہ گیس قلت سے متعلق تمام صوبوں نے مل کر

فیصلہ کرنا ہے ۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ ملک میں گیس کی مکمل طلب ساڑھے سات ارب

مکعب فٹ یومیہ تک ہے ،ملک میں گیس کی ساڑھے تین ارب مکعب فٹ یومیہ تک قلت ہے ۔عمر ایوب نے کہاکہ تمام صورتحال مشترکہ مفادات کونسل میں زیر بحث آچکی ہے ،اگلے سال تک سندھ کے پاس بھی کسی کو دینے کے لئے گیس نہیں ہو گی ۔عمر ایوب نے کہاکہ سندھ کی اپنی ضرورت پوری نہیں ہو گی ۔


انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎