بہترین زندگی کے راز, اسپیشل نفسیاتی مسائل کا حل , اپنی صحت بہتربنائیں, اسلام اورہم, ترقی کےراز, عملی زندگی کےمسائل اورحل, تاریخ سےسیکھیئے, سماجی وخاندانی مسائل, ازدواجی زندگی بہتربنائیں , گھریلومسائل, روزمرہ زندگی کےمسائل, گھریلوٹوٹکے اسلامی واقعات, کریئر, کونساپیشہ منتخب کریں, نوجوانوں کے مسائل , بچوں کی اچھی تربیت, بچوں کے مسائل , معلومات میں اضافہ , ہمارا پاکستان, سیاسی سمجھ بوجھ, کالم , طنز و مزاح, دلچسپ سائینسی معلومات, کاروبار کیسے کریں ملازمت میں ترقی کریں, غذا سے علاج, زندگی کےمسائل کا حل قرآن سے, بہترین اردو ادب, سیاحت و تفریح, ستاروں کی چال , خواتین کے لیے , مرد حضرات کے لیے, بچوں کی کہانیاں, آپ بیتی , فلمی دنیا, کھیل ہی کھیل , ہمارا معاشرہ اور اس کی اصلاح, سماجی معلومات, حیرت انگیز , مزاحیہ


ظرف

  پیر‬‮ 12 مارچ‬‮ 2018  |  14:00

ایک دن ابو جہل دربارِ رسالت صلی اللہ علیہ وآلی وسلم میں حاضر ہوا اور آتے ہی کہنے لگا کہ پورے خاندان بنو ہاشم میں نعوذباللہ آپ کی سورت بہت قبیح دکھائی دیتی ہے۔ آپ نے فرمایا تو نے سچ کہا:ابھی ابو جہل وہیں موجود تھا کہ حضرت ابو بکر صدیق تشریف لائے جب ان کی نظر آپ صلی اللہ علیہ وآلی وسلم کے چہرہ اقدس پر پڑی تو انہوں نے عرض کیا یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلی وسلم آپ آسمانِ حْسن کے روشن ماہتاب ہیں ۔

حضور اکرم صلی اللہ علیہ وآلی وسلم نے

فرمایا تم نے بھی سچ کہاہے۔وہاں موجود صحابہکرام نے عرض کی کہ یا رسول اللہ آپ نے جو جواب ابو جہل کو دیا وہی حضرت ابو بکر صدیق کو دیا اور دونوں کو سچا کہا یہ کیسے ممکن ہے ۔جناب رسالت مآب صلی اللہ  مآب صلی اللہ علیہ وآلی وسلم نے فرمایا کہ میں ایک شفاف آئینہ ہوں اس میں جیسا کوئی ہو گا ویسا ہی دکھائی دے گا۔ اسی لیے ان دونوں اصحاب کو میرے چہرے میں اپنا اپنا عکس ہی نظر آیا حکایت، مولانا رومی،


انٹرنیٹ کی دنیا سے ‎‎

دن کی زیادہ پڑھی گئیں پوسٹس‎